پنجاب

راولپنڈی (افتخار خٹک سے )ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راولپنڈی محمد افضل مجوکہ

راولپنڈی (افتخار خٹک سے )ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج راولپنڈی محمد افضل مجوکہ نے 9سالہ بچے کو اغوا اور جنسی زیادتی کے بعد قتل کے مقدمہ میں نامزد ملزم کو الزام ثابت ہونے پر موت کی سزا سنادی ہے جبکہ دیگر دفعات کے تحت مجموعی طور پر17سال قید اور2لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے عدالت نے مقتول کے ورثا کو 5لاکھ روپے ہرجانہ بھی ادا کرنے کا حکم دیا ہے تھانہ صدر بیرونی پولیس نے رواں سال23فروری کو مقتول کے والدیوسف شاہ کی مدعیت میں نامعلوم ملزم کے خلاف تعزیرات پاکستان کی دفعات 302، 377 اور201 کے تحت مقدمہ نمبر 361درج کیا تھاجس میں کہا گیا تھا کہ اس کا9سالہ بیٹا گھر سے سودا سلف لینے دکان پر گیا جو واپس نہ آیاجسے کسی نے اغوا کر لیا ہے بعد ازاں بچے کی لاش ملنے پر اس سے جنسی زیادتی بھی ثابت ہو گئی تھی بعد ازاں پولیس نے ارسلان حسین عرف ارسلان قمر کو گرفتار کیا تھا گزشتہ روز ٹرائل مکمل ہونے پر عدالت نے ملزم کو قتل کی دفعہ کے تحت موت کی سزا سنائی ہے عدالت نے ضابطہ فوجداری کی دفعہ544-Aکے تحت مقتول کے قانونی ورثا کو 5لاکھ روپے بطور ہرجانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا عدالت نے حکم دیا ہے کہ ملزم کی جائیداد فروخت کر کے لواحقین کو ہرجانہ ادا کی جائے عدم ادائیگی ہرجانہ کی صورت میں ملزم کو مزید6ماہ قید بھگتنا ہو گی عدالت نے دفعہ364کے تحت 10سال قید اور1لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے اسی طرح دفعہ201کے تحت ملزم کو 7سال قید اور1لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی ہے ملزم کو دی گئی قید کی دونوں سزاؤں پر بیک وقت عملدرآمد ہو گا جبکہ عدالت نے ملزم کو ضابطہ فوجداری کی دفعہ382-Bکا فائدہ بھی دیا ہے جس کے تحت ملزم کا عرصہ حوالات سزا سے منہا کیا جائے گا۔

MKB Creation

Mehr Asif

Chief Editor Contact : +92 300 5441090

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

MKB Creation
Back to top button

I am Watching You