انٹرنیشنلاہم خبریں

افغانستان: ہسپتال اور جنازے پر حملوں میں 38 افراد جاں بحق

کابل: افغانستان میں دو مختلف واقعات میں میٹرنٹی ہوم اور جنازے میں حملوں سے 38 افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مسلح افراد نے مغربی کابل کے علاقے دشتِ برچی میں میٹرنٹی ہسپتال پر حملہ کیا ، حملہ آوروں نے ہسپتال میں موجود افراد کو یرغمال بنا لیا تھا۔

افغان خبر رساں ادارے کے مطابق کابل میں ہسپتال پر حملے میں 14 افراد جاں بحق ہوئے، حملے میں جاں بحق ہونے والوں میں دو نومولود سمیت مائیں اور نرسز بھی شامل ہیں۔

خبر رساں ادارے کے مطابق افغان سکیورٹی فورسز نے کئی گھنٹوں کے آپریشن کے بعد 100 افراد کو بازیاب کروا لیا ہے، افغان سیکورٹی فورسز نے تین غیرملکیوں کو بھی بازیاب کروا لیا۔اس حملے سے افغان طالبان نے لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔

دریں اثناء افغانستان کے صوبے ننگر ہار میں پولیس اہلکار کے جنازے پر خود کش حملے کے دوران 24 افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔ ننگر ہار میں ہونے والے دھماکے کے دوران ننگر ہار صوبائی کونسل کے ممبر عبد اللہ ملکزئی بھی چل بسے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق خود کش دھماکا افغان صوبہ ننگر ہار کے ضلع خیوہ میں ہوا، واقع کی ذمہ داری تاحال کسی نے قبول نہیں کی۔

افغان خبر رساں ادارے نے عینی شاہدین کے حوالے سے بتایا ہے کہ دھماکا اس وقت کیا گیا جب شہریوں کی بڑی تعداد جنازے میں شرکت کے لیے پہنچی تھی،

خبر رساں ادارے کے مطابق زخمی ہونے والوں کی تعداد 70 ہے جبکہ زیادہ تر زخمیوں کی حالت نازک ہے اور تشویشناک حالت میں انہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

Mehr Asif

Chief Editor Contact : +92 300 5441090

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

I am Watching You