سوہاوہ

آج کشمیر پر بھارتی تسلط اور لاک ڈاؤن کو ڈیڑھ سال کا عرصہ گزر چکا

یکجہتی کشمیر کے لیے اُسی جذبہ ایمانی کی ضرورت ہے جو ایک بیٹی کی پکار پر محمد بن قاسم ؒ کو یہاں لے آئی۔

امیر عبدالقدیر اعوان
ٓآج کشمیر پر بھارتی تسلط اور لاک ڈاؤن کو ڈیڑھ سال کا عرصہ گزر چکا ہے اور ہم زبانی احتجاج کر کے یہ سمجھ رہے ہیں کہ ہم نے اپنا فرض ادا کر دیا۔ہمارا ماضی ہمیں راہنمائی دیتا ہے کہ اسی خطہ زمین کی ایک بیٹی کی آہ پر محمد بن قاسم ؒ یہاں تشریف لائے اور اس کی ناموس کی حفاظت کرتے ہوئے لاکھوں مسلمانوں کو مشرف بہ اسلام کیا۔آج ہمیں بھی اُسی غیر تِ ایمانی کی ضرورت ہے کہ عملی طو ر پر اس کا تدارک کیا جا سکے۔ان خیالات کا اظہار امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان نے جمعتہ المبار ک کے موقع پر
یوم کشمیر پربات کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ بحیثیت مجموعی ہمارے اوپر مردہ پن ہے اور یہ مردہ پن اس لیے ہے کہ ہم بے عملی کا شکار ہیں۔ہم انفرادی طورپر اپنے اعمال کو دیکھیں کہ کیا ہمارے اعمال دین اسلام کے مطابق ہیں یا تجاوز میں زندگی بسر کر رہے ہیں۔اگر ہم نے اس روش کو نہ چھوڑا تو روز آخرت ہمیں ایک ایک بات کا حساب دینا ہوگا اور پھر اُس بارگاہ میں کوئی غلط بیانی نہ ہو سکے گی۔کیونکہ اللہ کریم ہر چیز پر قدرت رکھتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ باعمل مسلمان کا ہر عمل معاشرے میں سکھ کا سبب بنتا ہے۔جو غیر مسلم کے لیے ایسا نمونہ ثابت ہوتا ہے کہ انہیں بھی اسلام سے رغبت ہو جاتی ہے۔یاد رہے کہ کل بروز ہفتہ 6 فروری کو دارالعرفا ن منارہ میں دو روزہ ماہانہ روحانی اجتماع کا انعقاد ہو رہا ہے جس میں بروز اتوار دن 11:00 بجے حضرت امیر عبدالقدیر اعوان مد ظلہ العالی خصوصی خطاب فرمائیں گے اور اجتماعی دعا بھی ہوگی۔اس اجتماع میں ملک کے طول و عرض سے سالکین اپنی روحانی تربیت کے لیے حاضر ہوتے ہیں۔اس کے علاوہ 15 رکنی وفد یو کے سے اپنی تربیت اور ذکر قلبی اختیا ر کرنے کے لیے ایک ہفتہ سے دارالعرفان منارہ میں موجود ہے۔اللہ کریم تمام مسلمانوں کو برکات نبوت ﷺ سے مستفید فرمائیں۔

MKB Creation

Mehr Asif

Chief Editor Contact : +92 300 5441090

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

MKB Creation
Back to top button

I am Watching You